کراچی میں ایک نوجوان کی قبر سے آذان کی آواز

محترم ناظرین السلام علیکم اللہ تعالی نے قرآن پاک میں ارشاد فرمایا ہے کہ تیرا رب فیصلہ کر چکا ہے کہ اس کے سوا کسی کی عبادت نہ کرو اور ماں باپ کے ساتھ نیکی کرو اگر تیرے سامنے ان میں سے ایک یا دونوں بڑھاپے کو پہنچ جائیں تو انہیں اف تک نہ کہو اور انہیں نا جھڑکو اور ان کے ساتھ ادب سے بات کرو اور شفقت کے ساتھ عاجزی سے جھکے رہو اور کہو کہ اے میرے رب جس طرح انہوں نے مجھے بچپن سے پالا ہے اسی طرح تو بھی ان پر رحم فرما والدین کے ساتھ حسن سلوک پر اجر اور نافرمانی پر بدترین سزا رکھی گئی ہے والدین کے فرمانبردار کا ایک واقعہ کراچی کے سباء سینما کے قریب واقع قبرستان میں پیش آیا ہے کہ جب اسے وفات کے بعد تدفین کے لیے لایا گیا اس دوران کچھ ایسے واقعات پیش آئے کہ لوگوں پر رقت طاری ہو گئی خواتین وحضرات پاکستان کے ایک اخبار روزنامہ امت کے مطابق قبرستان کے خدمت گار عبدالقیوم نے ایک قبر کی نشاندہی کی اور بتایا کہ یہ قبر ایک 22 سالہ نوجوان کی ہے جو اپنے ماں باپ کا نہایت خدمت گزار اور فرمانبردار تھا یہ نوجوان قریبی مسجد کا مؤذن بھی تھا پانچ وقت کا نمازی تھا جب اس نوجوان کا انتقال ہوا تو سب نے دیکھا ہے کہ جب اس کی قبر کھودی جارہی تھی تو قبر کی مٹی خود بخود ہی باہر کی جانب ابھرنے لگی ایسا لگتا تھا کہ انسانوں کے ساتھ کوئی نادیدہ مخلوق بھی اس کی قبر کھودنے میں مدد کر رہی ہے یہ منظر دیکھ کر وہاں پر موجود ایک عالم دین نے کہا کہ قبر بھی اس نوجوان کا شدت سے انتظار کر رہی ہے اس کے بعد اس نوجوان کی تدفین کر دی گئی چند روز بعد قبرستان کی خدمت گار نے اس نوجوان کے گھر والوں کو آکر بتایا کہ آپ کے بیٹے کی قبر سے کبھی کبھی اذان کی آواز آتی ہے اس کے بعد گھر والوں نے قبر پر پہرا دیا تو کچھ ہی گھنٹوں بعد قبر سے مدہم سی آذان کی آواز آنے لگی اس واقعہ کو وہاں پر موجود کئی لوگوں نے دیکھا آذان کی آواز آہستہ آہستہ مدہم ہوجاتی پھر ختم ہوجاتی آج نوجوان کو دفن ہوئے کئی سال گزر چکے ہیں مگر اس نوجوان کی قبر سے اذان کی آواز آج بھی سنائی دیتی ہے کہا جاتا ہے کہ اس نوجوان پر اللہ تعالی کا یہ کرم والدین سے بے پناہ محبت اور حسن سلوک کی وجہ سے ہے خواتین و حضرات جیسا کہ ہم نے شروع میں بتایا تھا کہ یہ واقعہ روزنامہ امت کے توسط سے آپ تک پہنچایا ہے ہمیں نہیں پتا کہ اس رپورٹ میں حقیقت کتنی ہے اور مبالغہ آرائی کتنی ہے مگر ایک بات طے ہے کہ اللہ کریم نے قران مجید میں وعدہ فرمایا ہے کہ والدین کے ساتھ اچھا سلوک اور اچھا برتاؤ کرنے والے کو جو اجر دیا جائے گا وہ دنیا دیکھے گی۔
دوستو اس زیادہ سے زیادہ اپنے دوستوں سے شیئر کیجئے

اپنا تبصرہ بھیجیں